• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 25533

    عنوان: میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ اگر کسی سے دعائے قنوت فوت ہوگئی (رمضان میں) اور امام رکوع میں چلے گئے تو اس صورت میں کیا طریقہ کار ہے؟ (۱)کیا وتر کو دوبارہ دوہرانا ہوگا یا یہ درست ہے کیوں کہ ہم امام کے تابع ہیں؟ 

    سوال: میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ اگر کسی سے دعائے قنوت فوت ہوگئی (رمضان میں) اور امام رکوع میں چلے گئے تو اس صورت میں کیا طریقہ کار ہے؟ (۱)کیا وتر کو دوبارہ دوہرانا ہوگا یا یہ درست ہے کیوں کہ ہم امام کے تابع ہیں؟ 

    جواب نمبر: 25533

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ل): 1544=1100-11/1431

    وتر کو دوبارہ دہرانے کی ضرورت نہیں، وتر کی نماز اس مقتدی کی صحیح ہوگئی۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند