• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 21037

    عنوان:

    حضرت نماز کی حالت میں بعض احباب سجدہ میں جاتے وقت اور اٹھتے وقت پیچھے جبہ یا پینٹ کو دونوں ہاتھ سے جھٹکتے ہیں اور چڑھاتے ہیں۔ سنا ہے کہ تین سے زائد مرتبہ دونوں ہاتھ سے کوئی عمل کرنے سے عمل کثیر ہوتا ہے جس سے نماز فاسد ہو جاتی ہے؟ اور ایسے امام کے پیچھے نماز پڑھنے سے کیا ہوتا ہے اس کی وضاحت فرماویں۔

    سوال:

    حضرت نماز کی حالت میں بعض احباب سجدہ میں جاتے وقت اور اٹھتے وقت پیچھے جبہ یا پینٹ کو دونوں ہاتھ سے جھٹکتے ہیں اور چڑھاتے ہیں۔ سنا ہے کہ تین سے زائد مرتبہ دونوں ہاتھ سے کوئی عمل کرنے سے عمل کثیر ہوتا ہے جس سے نماز فاسد ہو جاتی ہے؟ اور ایسے امام کے پیچھے نماز پڑھنے سے کیا ہوتا ہے اس کی وضاحت فرماویں۔

    جواب نمبر: 21037

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(م): 434=434-4/1431

     

    صحیح یہ ہے کہ ایک رکن میں لگاتار تین مرتبہ یا اس سے زائد عمل قلیل بھی عمل کثیر بن جاتا ہے اور دونوں ہاتھ سے کوئی عمل کرنا یہ خود عمل کثیر ہے اس سے احتراز لازم ہے کیوں کہ عمل کثیر سے نماز فاسد ہوجاتی ہے، چاہے مقتدی کرے یا امام اور جب امام کی نماز فاسد ہوجائے گی تو مقتدیوں کی نماز بھی فاسد ہوگی۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند