• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 20805

    عنوان:

    اقامہ کہتے ہوئیے حی علی الصلاة پر کھڑے ہونا کیا نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے؟ باحوالہ جواب دیں۔(۲) کیانماز میں ناف کے نیچے ہاتھ باندھنا نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے؟ براہ کرم، دلیل کے ساتھ جوا ب دیں۔

    سوال:

    اقامہ کہتے ہوئیے حی علی الصلاة پر کھڑے ہونا کیا نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے؟ باحوالہ جواب دیں۔(۲) کیانماز میں ناف کے نیچے ہاتھ باندھنا نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت ہے؟ براہ کرم، دلیل کے ساتھ جوا ب دیں۔

    جواب نمبر: 20805

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ل): 685=480-5/1431

     

     اقامت کے وقت امام کا اپنے حجرہ سے آکر مصلے پر بیٹھ جانا اور ?حی علی الصلاة? پر کھڑے ہونا نبی صلی اللہ علیہ وسلم سے ثابت نہیں، آپ صلی اللہ علیہ وسلم کے زمانے میں معمول یہ تھا کہ جب آپ علیہ السلام حجرہٴ مبارکہ سے نکلتے تو حضرت بلال رضی اللہ عنہ اقامت شروع کرتے اور سارے صحابہ اقامت شروع ہوتے ہی کھڑے ہوجاتے اور آپ کے آنے تک صفیں درست ہوجاتی تھیں: کان بلال رضي اللہ عنہ یوٴذن إذا دحضت الشمس فلا یقیم حتی یخرج النبي صلی اللہ علیہ وسلم فإذا خرج أقام الصلاة حین یراہ (مسلم شریف: ۱/۲۲۱)

    (۲) جی ہاں! ثابت ہے: عن علي رضي اللہ عنہ قال: السنة وضع الکف علی الکف في الصلاة تحت السرة (أبوداوٴد شریف)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند