• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 177086

    عنوان: بچوں كی نگرانی كی وجہ سے جماعت ترك كرنا؟

    سوال: کیا بچوں کی نگرانی کی وجہ سے جماعت ترک کی جاسکتی ہے مثلاً نماز کے وقت بچے شور شرابا کرتے ہیں اور لڑتے جھگڑتے ہیں تو کیا ان کی نگرانی کے واسطے جماعت سے نماز نہیں پڑھ پاتے جماعت ہونے کے بعد بغیر جماعت کے نماز پڑھ لیتے ہیں تاکہ دوسرے اساتذہ نماز پڑھنے کے بعد ان بچوں کی نگرانی کریں تو کیا ایسی صورت میں جماعت ترک کر نے گنجائش ہے؟

    جواب نمبر: 17708601-Sep-2020 : تاریخ اشاعت

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 831-622/H=07/1441

    جماعت کا ترک جن اعذار کی وجہ سے درست ہے اُن اعذار میں شور شرابہ کرنے والے بچوں کی نگرانی نہیں ہے پس مستقلاً جماعت کو اس کی وجہ سے چھوڑے رکھنا مکروہ ہے شور شغب اور لڑائی جھگڑے کے متعلق نگرانی کا کوئی دوسرا مناسب انتظام کرنا چاہئے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند