• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 174013

    عنوان: سفر شرعی سے واپس آکر دو چار دن امامت کرکے پھر سفر میں جانے کا ارادہ ہو تو قصر اور اتمام كا كیا مسئلہ ہے؟

    سوال: بندہ کو ایک مسئلہ دریافت کرنا ہے زید کا وطن اصلی بنگلور ہے اور بلگام میں امامت کرتا ہے اپنے بیوی بچوں کے ساتھ وہیں کرایہ کے مکان میں رہتا ہے اور مستقل بلگام میں ہمیشہ امامت کا ارادہ نہیں ہے بلگام سے سفر شرعی کرکے واپس بلگام آکر دو چار دن امامت کرکے پھر سفر میں جانے کا ارادہ ہے تو براہ کرم یہ بتائیں کہ وہ ظہر عصر عشا ?کی نماز پڑھا سکتا ہے یا نہیں اگر امامت نہیں کرسکتا تو اس کی دوسری شکل کیا ہوگی؟

    جواب نمبر: 174013

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 206-142/B=02/1441

    بلگام آپ کا وطن اقامت ہے جب وہاں ۱۵/ دن یا اس سے زیادہ ٹھہرنے کی نیت کریں گے جب پوری نماز پڑھیں اور دو چار دن ٹھہرنے کی نیت ہے تو پھر آپ قصر کریں گے۔ صورت مذکورہ میں آپ ظہر ، عصر اور عشاء کی نماز نہ پڑھائیں۔ نائب امام سے یا موٴذن سے پڑھوالیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند