• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 160857

    عنوان: کیا ناف سے نیچے ہاتھ باندھنے کا کسی حدیث میں ذکر کیا گیا ہے

    سوال: میں نے نماز میں تکبیر تحریمہ کے بعد نیت باندھنے سے متعلق کئی احادیث کا مطالعہ کیا ہے جس سے معلوم ہوتا ہے کہ نماز میں نیت کے بعد دونوں ہاتھوں کو سینے پر باندھنا چاہئے ناف کے نیچے نہیں- کیا ناف سے نیچے ہاتھ باندھنے کا کسی حدیث میں ذکر کیا گیا ہے تو براہ کرم بحوالہ قرآن و حدیث جواب ارسال فرمائیں- عین کرم ہوگا-

    جواب نمبر: 160857

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:986-805/sd=8/1439

    مرد کے لیے ناف کے نیچے ہاتھ باندھنا مسنون ہے اور یہ حدیث سے ثابت ہے ، حضرت علقمہ بن وائل بن حجر اپنے والد وائل بن حجر سے روایت کرتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کو دیکھا کہ آپ نماز میں اپنے دائیں ہاتھ کو بائیں ہاتھ پر ناف کے نیچے رکھتے ہیں ۔( آثار السنن )اس مسئلے کی تفصیل کے لیے دار العلوم دیوبند کے چند اہم فتوے نامی رسالہ صفحہ : ۳۱دیکھیں ، یہ رسالہ دار العلوم دیوبند کی ویب سائٹ پر موجود ہے ۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند