• عبادات >> صلاة (نماز)

    سوال نمبر: 154366

    عنوان: ایسے امام كے پیچھے نماز پڑھنا جس كی ڈاڑھی شریعت كے مطابق نہ ہو اور پاجامہ بھی ٹخنوں سے نیچے ہو؟

    سوال: حضرت، یہ رہنمائی فرمائیں کہ کسی ایسے امام کے پیچھے نماز پڑھنا کیسا ہے جن کی داڑھی بھی شریعت کے مطابق نہ ہو اور پائینچے بھی ٹخنوں سے نیچے ہوں او رٹوپی بھی نہ پہنی ہو۔ جزاک اللہ

    جواب نمبر: 154366

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:1412-1342/sn=2/1439

    کم ازکم ایک مشت کے بہ قدر ڈاڑھی رکھنا شرعاً واجب و ضروری ہے، اس سے پہلے کٹوانا ناجائز ہے، اس طرح ٹخنے کے نیچے پائینچے لٹکانا بھی جائز نہیں ہے مکروہ تحریمی ہے، اور جو شخص ان دونوں امروں میں سے کسی کا بھی ارتکاب کرے شرعاً وہ ”فاسق“ ہے، اور فاسق کے پیچھے نماز مکروہ ہوتی ہے؛ لہٰذا صورت مسئولہ میں اگر امام صاحب ایک مشت سے پہلے ڈاڑھی کٹوادیتے ہیں یا ان کی عادت ٹخنے کے نیچے بائجامہ پہننے کی ہے تو ان کے پیچھے نماز درست نہیں ہے، مکروہ تحریمی ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند