• عبادات >> ذبیحہ وقربانی

    سوال نمبر: 9174

    عنوان:

    میرا سوال یہ ہے کہ کیا قربانی کا ایک جانور جیسے گائے ، قربانی کی نیت سے قربان کیا جائے توکیا وہ تمام گھر والوں کی طرف سے ادا ہوجائے گا یعنی شوہر، بیوی اور نابالغ بچے؟ مہربانی فرماکر جواب عنایت فرماویں۔

    سوال:

    میرا سوال یہ ہے کہ کیا قربانی کا ایک جانور جیسے گائے ، قربانی کی نیت سے قربان کیا جائے توکیا وہ تمام گھر والوں کی طرف سے ادا ہوجائے گا یعنی شوہر، بیوی اور نابالغ بچے؟ مہربانی فرماکر جواب عنایت فرماویں۔

    جواب نمبر: 9174

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتویٰ: 1583=1326/ل

     

    اگر بڑے جانور (جس میں سات حصے کی قربانی جائے ہے) میں شوہر، بیوی، نابالغ بچے کی نیت سے قربانی کی جائے تو درست ہے، بشرطیکہ حصے سات سے زائد نہ ہوں۔ واضح رہے کہ اگر بیوی صاحب نصاب ہے تو اس کی طرف سے قربانی کرنے کے لیے اس کی اجازت ضروری ہے۔ یہ حکم بڑے جانور کا ہے، چھوٹے جانور جیسے بکری، بھیڑ، دنبہ وغیرہ میں ایک حصہ سے زائد کی قربانی درست نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند