• عبادات >> ذبیحہ وقربانی

    سوال نمبر: 18742

    عنوان:

    بکرے کی استطاعت کے باوجود بڑے جانور میں حصہ لینا

    سوال:

    میرا سوال قربانی کے بارے میں ہے۔ یہاں تمل ناڈو میں گائے کے بالمقابل بھیڑ کی قیمت زیادہ ہوتی ہے۔ اگر کسی کے پاس اتنا روپیہ ہے کہ وہ بکرا کی قربانی دے سکتا ہے لیکن وہ گائے کا ایک حصہ لیتا ہے اور باقی کا پیسہ کسی غریب کو دیتا ہے تو کیا اس کی قربانی ٹھیک اور جائز ہے؟ (ایک بکرے کا ریٹ چار ہزار اور گائے کے ایک حصے کا ایک ہزار روپیہ ہے)۔

    جواب نمبر: 18742

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(ب): 85=85-1/1431

     

    قربانی کا جانور خریدنے میں جتنا زیادہ پیسہ خرچ کرے گا اتنا ہی زیادہ ثواب ملے گا۔ گائے میں حصہ ایک ہزار کالینے کے بجائے چار ہزار کا بکرا لے کر قربانی میں چار گنا زیادہ ثواب ملے گا۔ ویسے گائے میں ایک حصہ لے کر باقی پیسوں کو غریب کی امداد کرنا یہ بھی درست ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند