• متفرقات >> دیگر

    سوال نمبر: 604329

    عنوان:

    پینشن بینیفٹ اکاؤنٹ کی شرعی حیثیت

    سوال:

    سوال : کیا فرماتے ہیں علماء کرام اس مسئلہ کے بارے میں ہے کہ کچھ عرصہ سے پاکستان میں سرکاری ملازمین کے ریٹائرڈ ہونے کے بعد انکا بینک میں ان کی پینشن سے ایک اکاؤنٹ کھولا جاتا ہے ہے جس کو پینشن بینیفٹاا کاؤنٹ کہا جاتا ہے ۔ حکومت اکاؤنٹ ہولڈر کو کچھ نہ کچھ منافع دیتی ہے جو ہر چھ مہینے بعد یا سال بہت منافع تبدیل ہوتا ہے سوال یہ ہے کیا کیا یہ پینشن والوں کا حکومت کی اس سکیم سے منافع لینا جائز ہے؟

    جواب نمبر: 604329

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:875-712/L=9/1442

     اگر دوسرا اکاؤنٹ خود حکومت کھلواتی ہے اور اس اکاؤنٹ کا کھلوانا ضروری ہو اور رقم پنشن ملنے والے کے قبضے اور تصرف میں آنے سے پہلے ہی اس اکاؤنٹ میں چلی جاتی ہو تو حکومت کی اس اسکیم سے نفع اٹھانے کی گنجائش ہوگی اور تمام رقم کی حیثیت تبرع وانعام کی ہوگی اور اگر اکاؤنٹ کھلوانا اختیاری ہو تو پھر اس سے بچنا چاہیے ۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند