• متفرقات >> دیگر

    سوال نمبر: 53866

    عنوان: جو امام نماز میں قرأت میں نوک مارتا ہو تو کیا اس کے پیچھے نماز پڑھنا درست ہوگا، کیا نماز ادا ہوگی یا پھر دہرانی ہوگی؟

    سوال: جو امام نماز میں قرأت میں نوک مارتا ہو تو کیا اس کے پیچھے نماز پڑھنا درست ہوگا، کیا نماز ادا ہوگی یا پھر دہرانی ہوگی؟

    جواب نمبر: 53866

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1166-948/H=98/1435-U قرأت میں نوک مارتا ہے اس کا کیا مطلب ہے؟ وہ قرأت میں کیا غلطیاں کرتا ہے؟ صاف وواضح لکھ کر سوال کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند