• متفرقات >> دیگر

    سوال نمبر: 51118

    عنوان: ایک لڑکی جو کہ شادی شدہ ہے، گھر چھوڑ کر چلی جائے اور ایک رات باہر گذارے شوہر کی کی اجازت کے بغیر اور وہ کہاں گذارے اس کا علم تو صرف وہ جانتی ہے اور خدا ، ان دونوں کے علاوہ کسی کو بھی اس کا صحیح علم نہیں ہے ۔

    سوال: ایک لڑکی جو کہ شادی شدہ ہے، گھر چھوڑ کر چلی جائے اور ایک رات باہر گذارے شوہر کی کی اجازت کے بغیر اور وہ کہاں گذارے اس کا علم تو صرف وہ جانتی ہے اور خدا ، ان دونوں کے علاوہ کسی کو بھی اس کا صحیح علم نہیں ہے ۔ اب سوال یہ ہے کہ آیا اس نے جو رات گذاری ہے باہر وہ کس حالت میں گذاری یعنی کہ حرام کیا یعنی زناکے مرتکب ہوئی کہ نہیں؟کیوں کہ وہ کہتی ہے کہ وہ رات دواخانے میں گذاری ہے، اس کا علم ہمیں نہیں ہے ، ہم کیسے جانیں کہ وہ یہ رات کس کے ساتھ گذاری اور کیسے گذار ی ہے اور ایک بات کہ وہ اس وقت حمل سے تھی تو کیا اس کا نکاح باقی ہے کہ ختم ہوگیاہے، ؟ براہ کرم، اس کا جواب دیں۔

    جواب نمبر: 51118

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 384-384/M=4/1435-U مذکورہ لڑکی اگر زنا کا اقرار نہیں کرتی اور اس کے گناہ میں ملوث ہونے پر شرعی ثبوت بھی نہیں تو بلاتحقیق وثبوت کے اس کو متہم قرار دینا درست نہیں، اب رہی بات کہ رات دواخانے میں گزارنے کی ضررت اور مجبوری کیا تھی اور وہ رات کس طرح گذاری اس کی تفصیل تو لڑکی ہی بتاسکتی ہے، بہرحال اس کے شوہر نے اگر طلاق نہیں دی ہے تو نکاح باقی ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند