• معاملات >> دیگر معاملات

    سوال نمبر: 51856

    عنوان: ڈی ایم ٹی ایس کے اندر میں جتنی بھی بسوں کی کمپنیاں ہیں ، ان کے ملازم ان سبھی بسوں میں بنا ٹکٹ سفر کرتے ہیں ، کیا بنا ٹکٹ سفر کرنا جائز ہے؟

    سوال: میرا نام شمیم ہے، میں دہلی میں کلسٹر بس کمپنی میں کام کرتاہوں ، دہلی میں ڈی ٹی سی کے علاوہ ڈی ایم ٹی ایس نام کی کمپنی بس چلاتی ہے، ڈی ایم ٹی ایس نے الگ الگ تقریباً سات آٹھ کمپنییوں کو دہلی میں بس چلانے کا معادہ دے رکھا ہے، جس میں سے ایک کمپنی ہماری بھی ہے ، بس اور ڈرائیور ہماری کمپنی کا ہوتاہے اور کنڈکٹرکسی اور کمپنی کا ہوتاہے ، اب جو پیسہ آتاہے وہ ڈی ایم ٹی ایس میں جمع ہوجاتاہے، اور ہماری جتنی بسیں چلتی ہیں اتنے ہی پیسے ڈی ایم ٹی ایس ہماری کمپنی کو دیتی ہے، کبھی بس نہ چلنے پر یا دو بسوں کے ایک ساتھ چلانے یا اور بہت سی باتوں پر ڈی ایم ٹی ایس فائن بھی کرتی ہے ، کچھ شکایت ہونے پر کچھ اضافی رقم بھی دیتی ہے، اور ڈی ٹی سی کے ماہانہ پاس بھی ہماری بس میں ہوتاہے ، ڈی ٹی سی پاس کا پیسہ بھی ہماری کمپنی کو ملتاہے ، میرا سوال یہ ہے کہ (۱) ڈی ایم ٹی ایس کے اندر میں جتنی بھی بسوں کی کمپنیاں ہیں ، ان کے ملازم ان سبھی بسوں میں بنا ٹکٹ سفر کرتے ہیں ، کیا بنا ٹکٹ سفر کرنا جائز ہے؟

    جواب نمبر: 51856

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 718-718/M=6/1435-U ان ملازمین کو کمپنیوں کے مالکان کی طرف سے بغیر ٹکٹ سفر کی جازت (پاس) حاصل ہے تو درست ہے ورنہ نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند