• عبادات >> قسم و نذر

    سوال نمبر: 604002

    عنوان:

    رمضان میں اعتکاف کی نذر مان کر شعبان میں اعتکاف کرنا ؟

    سوال:

    گزشتہ سال میں نے یہ نذر مانی تھی کہ میرا فلاں کام ہو گیا تو میں رمضان کے پورے مہینے کا اعتکاف کرونگا لیکن لاک ڈاؤن کی وجہ سے یہ ممکن نہ ہو سکا ۔امسال میں اپنی اس نذر کو پورا کرنا چاہتا ہوں لیکن پریشانی یہ ہے کہ میں بارہویں کلاس کا اسٹوڈینٹ (student) بھی ہوں ۔اور 20 اپریل سے ہمارے پرکٹیکل(practical)ہوں گے اور 5 mayسے ہمارے امتحان شروع ہو جائیں گے ۔اور یہ دونوں چیزیں رمضان کے درمیان ہی شروع ہو جائیں گی۔

    اب سوال یہ ہے کہ کیا میں دوران اعتکاف پیکٹیکل اور امتحان کے لئے جا سکتا ہوں؟ اگر جا سکتا ہوں تو مجھے کن کن شرائط پر عمل کرنا پڑے گا۔باہر اگر ضرورةً مجھے کسی سے بات چیت کرنی پڑ جاے تو کیا اس کی اجازت ہوگی ۔نیز میں نے قسم میں یہ کہا تھا کہ رمضان کے پورے مہینے کا اعتکاف کروں گا اب اگر شعبان کے پورے مہینے اعتکاف کر لوں تو کیا نذر پوری ہو جاءَ گی اور کیا اعتکاف کے ساتھ روزے بھی رکھنے ہوں گے ۔تسلی بخش جواب دیکر شکریہ کا موقع عنایت فرمائیں۔

    جواب نمبر: 604002

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 832-173T/B=01/1443

     صورت مذکورہ میں آپ شعبان کے تیس دن روزے رکھ کر اعتکاف کریں اور اپنی نذر پوری کرلیں۔ شعبان میں اعتکاف کرنے سے بھی نذر پوری ہوجائے گی۔ اعتکاف کے لئے دن میں روزے رکھنا اور دن و رات مسجد میں قیام ضروری ہوگا۔ بہت ضروری بات کرنی ہو تو حالت اعتکاف میں کرسکتے ہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند