• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 63872

    عنوان: لڑکے نے دو گواہ اور لڑکی کی والدہ کی موجودگی میں لڑکی سے کہا ؛” میں فلاں بن فلاں نے آپ فلاں بن فلاں کو اتنے مہر کی عوض میں نکاح میں لیا ۔

    سوال: لڑکے نے دو گواہ اور لڑکی کی والدہ کی موجودگی میں لڑکی سے کہا ؛” میں فلاں بن فلاں نے آپ فلاں بن فلاں کو اتنے مہر کی عوض میں نکاح میں لیا ، کیا آپ نے قبول کیا “۔ لڑکی نے جواب دیا ؛” جی ، کیا“بس یہ کہا ،” قبول کیا“نہیں کہا، اس کے علاوہ اس طرح ہوا تو کیا نکاح ہوجائے گا یا نہیں؟ براہ کرم، جواب دیں۔

    جواب نمبر: 63872

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 396-396/Sd=6/1437 جی ہاں! صورتِ مسئولہ میں نکاح صحیح ہوجائے گا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند