• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 61660

    عنوان: شادی کی پہلی رات ہمبستری کرنا ضروری ہے یا نہیں؟

    سوال: (۱) ایک کتاب میں پڑھا تھا کہ جب پہلی مرتبہ دولہن گھر میں آئے تو اس کے پاؤں کو دھو کے اس پانی کو پورے گھر کے کونوں میں پھینکنا چاہئے ، اس سے گھر میں برکت آتی ہے، کیا یہ بات درست ہے؟ کیا یہ کسی حدیث وغیرہ سے ثابت ہے یا نہیں؟ (۲) شادی کی پہلی رات ہمبستری کرنا ضروری ہے یا نہیں؟ کچھ لوگ کہتے ہیں کہ لازمی ہے ، کچھ کہتے ہیں کہ لازمی نہیں ہے۔ آپ اس بارے میں بتائیں۔

    جواب نمبر: 61660

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 784-784/Sd=1/1437-U (۱) یہ رسم محض اور بے اصل ہے، شریعت سے اس کا کوئی ثبوت نہیں، حضرت مولانا اشرف علی تھانوی رحمہ اللہ فرماتے ہیں : ” ایک عمل مشہور ہے کہ دولہن کے پاوں دھوکرگھر میں جگہ جگہ پانی چھڑکا جاتا ہے ، تذکرة الموضوعات میں اس کو موضوع ( لغو) قرار دیا ہے “ ( اسلامی شادی، ص: ۲۳۴، ط: ادارہ افادات اشرفیہ، باندہ ) (۲) ضروری نہیں ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند