• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 604402

    عنوان:

    مجلس کے اندر صرف لڑکا اور لڑکی ہیں اور دو مسلمان مرد گواہ نہیں تو نکاح صحیح نہ ہوگا

    سوال:

    میں ایک بیوہ سے شادی کرنا چاہتا ہوں میرا یہ پہلا نکاح ہے لیکن میرے اور لڑکی کے والدین اس نکاح پر راضی نہیں ہونگے واضح رہے کہ لڑکی اس نکاح پر راضی ہے اب صورتِ مسئولہ میں ولی کی اجازت کے بغیر لڑکا لڑکی ایک ہی مجلس میں موجود ہو تو نکاح کرنے ے کا مکمّل طریقہ بتائیں ۔ جزاک اللہ

    جواب نمبر: 604402

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 946-625/B=10/1442

     صورت مسئولہ میں لڑکی کے والدین سے اجازت اور رضامندی حاصل کرلینی چاہئے، اسی میں خیر و برکت ہوتی ہے۔ بغیر ولی کی اجازت اور رضامندی کے جو نکاح ہوتا ہے اس میں خیر و برکت نہیں ہوتی۔ تھوڑے ہی دنوں کے بعد وہ نکاح ختم ہوجاتا ہے۔ اگر نہیں بھی ٹوٹا تو زندگی بھر کے لئے رنجش اور نااتفاقی ہوجاتی ہے۔ صرف مجلس کے اندر لڑکا اور لڑکی ہے اور دو مسلمان مرد گواہ نہیں ہیں تو نکاح صحیح نہ ہوگا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند