• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 600173

    عنوان: بدعتی عورت سے نکاح کا حکم

    سوال:

    کیا کوئی آدمی کسی بدعتی عورت سے نکاح کر سکتا ہے ؟ اور اگر کر سکتا ہے تو کیوں اور اگر نہیں کر سکتا تو کیوں؟ تھوڑا تفصیل سے جواب دیں۔

    جواب نمبر: 600173

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:73-39/N=2/1442

     (۱، ۲): بدعتی عورت کے عقائد اگر کفر تک پہنچے ہوئے ہوں تو اُس سے کسی مسلمان مرد کا نکاح جائز نہیں۔ اور اگر اس کے عقائد واعمال صرف فسق کے درجے میں ہوں تو اُس سے کسی مسلمان کا نکاح اگرچہ جائز ہے، یعنی: ہوجائے گا؛ لیکن کراہت سے خالی نہیں؛ کیوں کہ اس کے غلط عقائد واعمال کا اثر بچے اور گھر کے ماحول کو متاثر کرے گا، نیز اختلافی عقائد واعمال کو لے کر میاں بیوی کے درمیان اختلاف وکشیدگی ممکن ہے۔ اور یہ ازدواجی زندگی میں سخت مضر ہے ۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند