• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 58184

    عنوان: جن سے مسئلہ پیدا ہونے كا خدشہ ہو ایسے لوگوں كو دعوت ولیمہ نہ دینا كیسا ہے؟

    سوال: میں غیر شادی شدہ ہوں، اور شریعت کے مطابق شادی کرنا چاہتاہوں، میں بارات لے جانا نہیں چاہتاہوں اور میرے گھروالے اس کے لیے تیار ہیں، لیکن میرے کچھ رشتہ دار بارات لے جانا اور شادی کی تمام رسومات ادا کرنا چاہتے ہیں ۔ مجھے ڈر ہے کہ اگر میں ولیمہ کے لیے دعوت دینا چاہوں تو وہ میری ماں کو بہکا سکتے ہیں اور مسئلہ پیدا کرسکتے ہیں۔ ایسی صورت حال میں کیا ان کو دعوت کرنا درست ہے؟کیا ان کو دعوت دیئے بغیر میرا ولیمہ اور نکاح شریعت کے مطابق ہوگا؟

    جواب نمبر: 58184

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 374-367/H=5/1436-U جن رشتہ داروں کی طرف سے خلاف شرع رسوم کے ارتکاب کروانے کا اندیشہ ہے اور واقعةً وہ اندیشہ ہے، آپ اگر دعوتِ ولیمہ میں ان رشتہ داروں کو شرکت کی دعوت نہ دیں بلکہ ان کے بجائے دیگر اعزہ نیز غرباء کو مدعو کرکے ولیمہ کردیں تو کچھ حرج نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند