• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 53740

    عنوان: عیسائی عورت سے شادی

    سوال: دوست مسلمان ہے اور پاکستان میں رہتاہے ، وہ ایک عیسائی عورت سے شادی کرنا چاہتاہے، (اس وقت وہ عورت اسلام میں داخل ہونا نہیں چاہتی ہے ، لیکن میرا دوست اسلامی تفصیلات کے حوالے سے اس کو منانے کی کوشش کررہا ہے ، مگر اس پر کوئی دباؤنہیں بنارہا ہے کہ اسلام قبول کرلو)۔ براہ کرم، مشورہ دیں کہ کیا نکاح جائز ہوجائے گا؟نیز اس بارے میں شریعت کیا کہتی ہے؟اور کیا اس ضمن میں کوئی مثال ہے ؟

    جواب نمبر: 53740

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1387-1122/B=9/1435-U جب وہ عیسائی عورت غیرشادی شدہ ہو اور اپنی خوشی سے اسلام قبول کرلے تو اس کے بعد ہی آپ کے دوست نکاح کرسکتے ہیں، اسلام قبول کرنے سے پہلے نکاح درست نہیں، کیونکہ آج کل کے عیسائی عموماً دہریہ ہوتے ہیں، اہل کتاب میں سے نہیں ہیں، لہٰذا احتیاط ضروری ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند