• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 30968

    عنوان: كیا جماع نه كرنے سے نكاح ٹوٹ جاتا هے؟

    سوال: ہماری شادی کو دوہفتے سے زیادہ ہوگئے ہیں اور میں ابھی تک اپنی بیوی سے جماع نہیں کرپایا ہوں، میں نے پہلے دن کرنا چا ہا تھا مگر کچھ میرے عضو خاص میں کچھ درد ہوا پھر میں نے دوسرے دن بھی کوشش کی مگر نہیں کرپایا، پھر بیوی کے ایام آگئے ۔ 4-5/ دن بعد پھر میں نے کوشش کی مگر ناکام رہا۔ میں اس صورت حال سے پریشان ہوگیا ہوں کہ یہ کیا ہورہا ہے۔ ایک دوست سے مشورہ کیا تو اس نے کہا کہ آپ کو کمزوری ہوگئی ہے، آپ اس کا علاج کروائیے اور اپنے کھانے پینے کا خاص خیال رکھئے۔ میں ایسا ہی کررہا ہوں، ان شاء اللہ مسئلہ بہت جلد ٹھیک ہوجائے گا۔ پوچھنا یہ ہے کہ مجھے کسی نے بتایا کہ ہے کہ میاں بیوی اگر ایک کمرے میں ساتھ رہے نکاح کے بعد اور جماع نہ کرے تو ایک خاص وقت کے بعد ان کا نکاح نہیں رہتا۔ یہ بات مجھے پریشان کررہی ہے۔ براہ کرم، مجھے میرے ای میل میں جواب دیں۔

    جواب نمبر: 30968

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(د): 749=105-4/1432 آپ کوغلط بات بتلائی گئی ہے، جماع نہ کرنے سے نکاح نہیں ٹوٹتا، وہ آپ کی بیوی ہے اس سے پیار ومحبت کی باتیں کریں تاکہ دل بستگی ہوکر رغبت ومیلان پیدا ہو، احساس کمتری وکمزوری ہرگز نہ کریں، نہ خدا کی رحمت سے مایوس ہوں کیونکہ مایوس وناامید ہونا کفر ہے۔ کسی اچھے پرانے حکیم کو دکھلاکر علاج کرائیں ان شاء اللہ فائدہ ہوگا۔ بعد نماز عشاء گیارہ سو گیارہ مرتبہ یَا لَطِیْفُ پڑھیں اول آخر گیارہ گیارہ بار درود شریف پڑھ کر دعا کریں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند