• معاشرت >> نکاح

    سوال نمبر: 17399

    عنوان:

    میرے پانچ لڑکے اور دو لڑکیاں ہیں۔ میری شادی سترہ سال کی عمر میں ہوئی تھی۔ اب میری عمر چالیس سال ہے آج سے بارہ سال پہلے میرا بچہ آپریشن سے ہوا ۔بیوی کو ہائی بلڈ پریشر ہے اور گردے خراب ہیں۔ اور بچے بند کرانے کے آپریشن کے بعد فرج سے مسلسل خون آتا ہے۔ کافی کمزور ہیں۔ ڈاکٹر ہمبستری سے منع کرتا ہے۔ کیا میں بیوی کی مرضی سے ان کو طلاق دے کر ان کی بہن جو چونتیس سال کی کنواری ہیں رشتے نہیں آتے شادی کرسکتا ہوں؟ کیا حکم ہے جلد جواب دیں میں بہت ٹینشن میں ہوں ابھی بیوی کا مکان الگ ہے دوسرا لوں گا۔

    سوال:

    میرے پانچ لڑکے اور دو لڑکیاں ہیں۔ میری شادی سترہ سال کی عمر میں ہوئی تھی۔ اب میری عمر چالیس سال ہے آج سے بارہ سال پہلے میرا بچہ آپریشن سے ہوا ۔بیوی کو ہائی بلڈ پریشر ہے اور گردے خراب ہیں۔ اور بچے بند کرانے کے آپریشن کے بعد فرج سے مسلسل خون آتا ہے۔ کافی کمزور ہیں۔ ڈاکٹر ہمبستری سے منع کرتا ہے۔ کیا میں بیوی کی مرضی سے ان کو طلاق دے کر ان کی بہن جو چونتیس سال کی کنواری ہیں رشتے نہیں آتے شادی کرسکتا ہوں؟ کیا حکم ہے جلد جواب دیں میں بہت ٹینشن میں ہوں ابھی بیوی کا مکان الگ ہے دوسرا لوں گا۔

    جواب نمبر: 17399

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(د):2068=1644-11/1430

     

    فی نفسہ ایسا کرنا جائز ہے، اگر آپ کو اپنے اوپر قابو نہ ہو تو موجودہ بیوی کو طلاق دے کر بعد عدت اس کی بہن سے نکاح کرنے کی شرعاً اجازت ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند