• عبادات >> جمعہ و عیدین

    سوال نمبر: 606770

    عنوان:

    خطبہ کے دوران حضورﷺ کا نام آنے پر درود پڑھنا

    سوال:

    کیا فرماتے ہیں مفتیان عظام اگر جمعہ کی خطبہ کے درمیان نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم کا اسم مبارک آجائے تو درود بھیجنا چاہیے یا نہیں؟ مدلل جواب دیکر ثوابِ دارین حاصل کریں۔

    جواب نمبر: 606770

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:275-132/sn=3/1443

    درود بھیجنا چاہیے ؛ لیکن دل میں، زبان سے الفاظ نہ ادا کرے ، یہی راجح ہے ۔

    والصواب أنہ یصلی علی النبی - صلی اللہ علیہ وسلم - عند سماع اسمہ فی نفسہ.[الدر المختار) (قولہ فی نفسہ) أی بأن یسمع نفسہ أو یصحح الحروف فإنہم فسروہ بہ، وعن أبی یوسف قلبا ائتمارا لأمری الإنصات والصلاة علیہ - صلی اللہ علیہ وسلم - کما فی الکرمانی قہستانی قبیل باب الإمامة واقتصر فی الجوہرة علی الأخیر حیث قال ولم ینطق بہ لأنہا تدرک فی غیر ہذا الحال والسماع یفوت.[الدر المختار وحاشیة ابن عابدین (رد المحتار) 3/ 36، مطبوعة: مکتبة زکریا، دیوبند، الہند)نیز دیکھیں : فتاوی دارالعلوم دیوبند:5/129، کراچی)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند