• متفرقات >> اسلامی نام

    سوال نمبر: 604585

    عنوان:

    فلیحہ كے بجائے كوئی اور نام تجویز كرنا؟

    سوال:

    میری چارہ ماہ کی بیٹی ہے جس کا نام میں نے فلیحہ (فلاح پانے والی) اور پورا نام میرے نام کی مناسبت سے فلیحہ اسد جمال خان رکھا- بچی دو تین بات بہت شدید بیمار ہوئی اور ہسپتال زیر علاج رہی- مجھے ۲-۳لوگوں نے کہ جن کے میں علم کا معترف ہوں کہا کہ اس کا نام بدلو یہ نام بھاری ہے - میں اس بات سے مکمل انکاری ہوں- میرا مؤقف ہے کہ یہ بات توہم پرستی اور میرے عقیدہ سے ٹکراتی ہے کہ ایک شرعی نام بدل دوں- چونکہ نام اسلامی، نیک اور قرآنی ہے میں اسی پر قائم و دائم ہوں لیکن اپنی اس رائے کے اوپر آپ سے شرعی طور تقاضے اور رہنمائی کا طلبگار ہوں- شکریہ

    جواب نمبر: 604585

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:784-545/sd=10/142

     فلیحہ کے معنی خراب نہیں ہیں، اس لیے یہ خیال کرنا صحیح نہیں ہے کہ اس نام کی وجہ سے بچی بیمار ہورہی ہے،یہ محض وہم ہے، باقی فلیحة لفظ عربی زبان میں مستعمل نہیں ہے، اس وجہ سے اگر کوئی دوسرا اچھا نام رکھ سکتے ہوں جو عربی زبان میں مستعمل ہو تو رکھ لیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند