• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 62768

    عنوان: مسلمان ہونے اور رہنے کیلیے کتنی چیزوں پر ایمان لانا ضروری ہے ؟

    سوال: مسلمان ہونے اور رہنے کیلیے کتنی چیزوں پر ایمان لانا ضروری ہے ؟ میں نے پڑھا ہے کہ اجمالی طور پر سات چیزوں پر ایمان لاناضروری ہے جنکا ذکر ایمان مفصل میں ہے .میں نے مولانا اشرف علی تھانوی کی کتب تعلیم الدین اور بہشتی زیور میں لکھے عقائد پڑھ لیے ہیں. اسکے علاوہ آپکی ویب سائٹ دارلعلوم دیوبند پر موجود مفتی کفایت اللہ صاحب کی کتاب تعلیم الاسلام میں موجود عقائد بھی پڑھ لیے ہیں. اسکے علاوہ مولانا ادریس کاندھلوی صاحب کی کتاب عقائد الاسلام کا مطالعہ بھی کر رہا ہوں. کیا یہ کافی ہے یا مجھے مذید عقائد کا مطالعہ کرنا چاہیے ؟

    جواب نمبر: 62768

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 236-226/L=3/1437-U عقائد کے سلسلے میں عرض یہ ہے کہ عقائد کے بارے میں کچھ چیزوں کا تعلق ماننے اور یقین کرنے سے ہے اور کچھ چیزوں کا تعلق نہ کرنے اور ان سے براء ت کا اظہار کرنے سے ہے جو چیزیں ماننے کے قبیل کی ہیں ان کا ذکر ایمانِ مجمل ومفصل میں آچکا ہے، اور جو چیزیں نہ ماننے اور ان سے براء ت ظاہر کرنے سے متعلق ہیں وہ ہیں کہ اللہ رب العزت کی شان میں گستاخی کرنے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے متعلق نازیبا کلمات کہنے اور آپ صلی اللہ علیہ وسلم کو نبی آخر الزماں نہ ماننے علم وعلماء کی شان میں گستاخی وغیرہ سے آدمی گریز کرے، اسی طرح اسلام کے علاوہ جتنے ادیاِ ن سابقہ ہیں وہ سب منسوخ ہیں اب اگر کسی کو نجات مل سکتی ہے تو اسلام پر عمل کرنے سے مل سکتی ہے، اس لیے مسلمان بننے کے لیے یہ بھی ضروری ہے کہ وہ ادیانِ سابقہ سے براء ت کا اظہار کرے۔ واضح رہے کہ مذکورہ بالا کتابوں میں عقائد سے متعلق ضروری باتیں آچکی ہیں ایک عام آدمی کے لیے اس کا جان لینا اور اس کے متعلق عقیدہ رکھ لینا کافی ہوگا، البتہ اگر آپ کو کوئی شبہ ہو تو آپ کسی مستند عالم دین سے استفسار کرلیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند