• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 61686

    عنوان: کیا زیدی (شیعہ) کافر ہیں یا نہیں؟ میری بھانجی کی منگنی ایک زیدی سے ہوگئی ہے اور دسمبر 2015میں شادی بھی ہے، کیا یہ شادی ہونی چاہئے؟الحمد للہ، ہم لوگ دیوبندی ہیں۔

    سوال: کیا زیدی (شیعہ) کافر ہیں یا نہیں؟ میری بھانجی کی منگنی ایک زیدی سے ہوگئی ہے اور دسمبر 2015میں شادی بھی ہے، کیا یہ شادی ہونی چاہئے؟الحمد للہ، ہم لوگ دیوبندی ہیں۔

    جواب نمبر: 61686

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 803-803/Sd=1/1437-U اگر زیدی فرقے کے عقائد کفریہ ہیں ، یعنی یہ فرقہ اگر قرآن کریم کے تحریف کا قائل ہے یا حضرت عائشہ صدیقہ رضی اللہ عنہا پر زنا کی تہمت لگاتا ہے، یا حضرت ابوبکر رضی اللہ عنہ کو کافر قرار دیتا ہے یا حضرت علی رضی اللہ عنہ کو خدا مانتا ہے یا وحی کے پہنچانے میں حضرت جبرئیل علیہ السلام کی طرف غلطی کی نسبت کرتا ہے، تو بلا شبہہ یہ فرقہ کافر ہے، اس لیے کہ یہ عقائد صریح طور پر کفریہ ہیں ، ان میں واضح طور پر ضروریات دین کا انکار پایا جاتا ہے، لہذا ایسی صورت میں آپ کی مسلمان بھانجی کا نکاح مذکورہ عقائد رکھنے والے زیدی شیعہ سے صحیح نہیں ہوگا اور ہند و پاک کے شیعہ تو اثناعشری ہیں ، جو کافر ہیں، اُن کی معتبر کتابوں میں جو عقائد مذکور ہیں ، وہ کفریہ ہیں، حضرت مولانا رشید احمد گنگوہی رحمة اللہ علیہ فرماتے ہیں: ہمارے ملک کے شیعہ حسب قواعد شرعیہ کافر ہیں اور متقدمین علماء نے اُن کے کفر میں جو اختلاف کیا ہے اس کی وجہ یہ ہے کہ تکفیر نہ کرنے والوں کو اُن کے اصول پر واقفیت نہیں ہوئی ۔ ( باقیات فتاوی رشیدیہ،ص: ۲۹۷، ۵۹۵، ۵۹۶ ) حاصل یہ کہ آپ اپنی بھانجی کا نکاح زیدی شیعہ سے ہر گز نہ کریں؛ بلکہ اُس کی شادی کسی دیندار مسلمان ہی سے کریں۔ قال ابن عابدین:ان الرافضي ان کان ممن یعتقد الألوہیة في علي أو أن جبرئیل غلط في الوحي أو کان ینکر صحبة الصدیق أو یقذف السیدة الصدیقة، فہو کافر لمخالفتہ القواطع المعلومة من الدین بالضرورة ۔۔ ( رد المحتار : ۳/۴۶، کتاب النکاح ، فصل في المحرمات، ط: دار الفکر، بیروت ) وقال: لا شک في تکفیر من قذف السیدة عائشة رضي اللّٰہ عنہا أو أنکر صحبة الصدیق أو اعتقد الألوہیة في علي أو أن جبرئیل غلط في الوحي أو نحو ذلک من الکفر الصریح المخالف للقرآن ۔ ( رد المحتار: ۴/۲۳۳، کتاب الجہاد، کذا في الفتاوی الہندیة : ۲/۲۶۴، ، کتاب السیر، الباب التاسع في أحکام المرتدین)۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند