• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 606356

    عنوان:

    کیا شیطان خواب میں آکر کہہ سکتا ہے کہ میں نبی ہوں؟

    سوال:

    بے شک شیطان نبی ﷺ کی صورت میں نہیں آ سکتا لیکن کیا شیطان خواب میں آ کے انسان سے کہہ سکتا ہے کہ میں نبی ﷺ ہو ں؟

    جواب نمبر: 606356

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 136-124/M=02/1443

     صحیح حدیث سے دلالةً ثابت ہوتا ہے کہ شیطان کسی کے خواب میں آکر یہ نہیں کہہ سکتا کہ ”میں نبی صلی اللہ علیہ وسلم ہوں“؛ چونکہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کو ہر امتی نے نہیں دیکھا، لہٰذا اگر تسلیم کرلیا جائے کہ شیطان اس طرح بول سکتا ہے تو پھر حدیث (”لا یتمثل بي الشیطان“ وفی روایة ”لا یتخیّل بي الشیطان“ شیطان میری شکل میں نہیں آسکتا) کے کوئی معنی نہیں رہ جاتے، نیز محدثین کے قول سے بھی اس کی تائید ہوتی ہے کہ ”جس شخص نے اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو خواب میں دیکھا خواہ آپ (صلی اللہ علیہ وسلم) کی معروف حالت میں دیکھا ہو یا کسی دوسری حالت میں اس نے حقیقتاً اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وسلم کو دیکھا“۔

    قال رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم: من رآني في المنام فقد رآني فإنّ الشیطان لا یتخیّل بي (بخاری: رقم الحدیث: 6994، باب من رأی النبيّ صلی اللہ علیہ وسلم فی المنام) ویصحّ إطلاق أن کل مَن رآہ في أيّ حالة کانت من ذلک فقد رآہ حقیقة واللہ اعلم۔ (فتح الباری: 2/437، ط: دار الرسالة العالمیة)

    بل الصحیح أنہ رآہ حقیقة سواء کان علی صفتہ المعروفة أو غیرہا لما ذکرہ المازري۔ (حاشیة البخاری للمحدث أحمد علی السہارنبوری: 3091، کتاب التعبیر، باب من رأی النبي صلی اللہ علیہ وسلم في المنام)۔ ط: مکتبة البشری پاکستان)۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند