• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 603976

    عنوان:

    سود کی رقم سرکاری اسکول كی ضروریات میں خرچ کرنا؟

    سوال:

    سود کی رقم سرکاری اسکول کے ضروریات میں خرچ کرنا؟

    جواب نمبر: 603976

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 817-563/B=08/1442

     سود کی رقم مال خبیث اور مال حرام ہے۔ اسے لے کر غریب و مقروض محتاج، بیوہ جو بہت تنگدستی کی وجہ سے پریشان ہیں ان کو بلانیت ثواب صدقہ کردینا ضروری ہے۔ سرکاری اسکول کی ضروریات میں یا اور کسی رفاہ عام میں خرچ کرنا جائز نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند