• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 602271

    عنوان:

    ایصال ثواب کے لئے نماز میں کیا نیت کی جائے ؟ کیا فرض کابھی ایصال ثواب ہوسکتا ہے ؟

    سوال:

    اپنے مرحوم والدین کے ایصال ثواب کے لئے نفل نماز کی نیت کیسے کی جاتی ہے ، اہل سنت کے مطابق؟ کیا والدین کے ایصال ثواب کے لئے فرض نماز پڑھی جا سکتی ہے ؟

    جواب نمبر: 602271

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:437-324/sn=6/1442

     (1) نماز پڑھنے سے پہلے یہ نیت کی جائے کہ یہ جو نماز پڑھ رہا ہوں اس کا ثواب اللہ تعالی فلاں مرحوم کو پہنچادے یا پھر نماز پڑھنے کے بعد مذکورہ بالا طریقے پر اس کا ثواب مرحومین کو پہنچادے ۔

    (2) راجح قول کے مطابق فرض نماز کا بھی ایصال ثواب ہوسکتا ہے ۔

    وفی البحر: من صام أو صلی أو تصدق وجعل ثوابہ لغیرہ من الأموات والأحیاء جاز، ویصل ثوابہا إلیہم عند أہل السنة والجماعة کذا فی البدائع، ثم قال: وبہذا علم أنہ لا فرق بین أن یکون المجعول لہ میتا أو حیا. والظاہر أنہ لا فرق بین أن ینوی بہ عند الفعل للغیر أو یفعلہ لنفسہ ثم بعد ذلک یجعل ثوابہ لغیرہ، لإطلاق کلامہم، وأنہ لا فرق بین الفرض والنفل. اہ. وفی جامع الفتاوی: وقیل: لا یجوز فی الفرائض اہ․ (الدر المختار وحاشیة ابن عابدین (رد المحتار) 3/ 152، کتاب الجنائز، باب صلاة الجنازة، مطبوعة: مکتبة زکریا، دیوبند)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند