• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 601322

    عنوان:

    ماں شریک بہن کی بیٹی سے شادی کرنا درست ہے یا نہیں؟

    سوال:

    میری بہن ہے لیکن ہماری ماں ایک ہے باپ الگ الگ ہے میری بہن کی پیدائش کے بعد اس کا آبو وفات ہوا پھر ماں نے اپنے خاوند کے بھائی سے شادی کی پھر میں پیدا ہو تو اب میں اس بہن کی بیٹی سے شادی کر سکتا ہوں؟

    جواب نمبر: 601322

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 273-181/SN=04/1442

     آپ کے لیے اپنی ماں شریک بہن کی بیٹی سے شادی کرنا شرعاً جائز نہیں ہے، حقیقی، باپ شریک اور ماں شریک تینوں طرح کی بہنیں اور ان کی بیٹیاں دائمی محرمات میں سے ہیں، ان سے نکاح قطعاً جائز نہیں ہے۔ ولا یحلّ للرجل أن یتزوج بأمہ ․․․․ ولا ببنات أختہ أي سواء کانت بنت اختہ لأب وامّ أو لاب أو لأمّ (بنایہ مع الہدایة: ۵/۲۱، ط: دارالکتب العلمیة، بیروت)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند