• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 600042

    عنوان: براہ راست انبیاء یا اولیاء كو مدد كے لیے پكارنا

    سوال:

    میرے سوالات یہ ہیں:- 1)رسول اکرم صلی اللہ علیہ والہ وسلم,حضرت علیُ المرتضٰی کرم اللہ وجہہ حضرت شیخ عبدالقادر جیلانی غوث پاک رحمہ اللہ تعالی کو مددکی نیت سے پکارنا(یارسول اللہ مدد,یاعلی مدد,یاغوث مدد)اسی طرح اولیائاللہ سے مدد مانگنااورمددمانگنے والے کانظریہ یہ ہو کہ حقیقی مددگاراللہ ہے ،یہ مقبول بندے واسطہِ رحمت ہیں،اوران سے مددطلب کرنااللہ سے ہی مددمانگناہے ،اوروہ ان اولیائکو یادیگر ہستیوں کو مسقتل بالذات نہیں مانتے کیااسطرح مددمانگناجائز ہے ؟

    2)اولیائاللہ کے ایصالِ ثواب کی نیت سے کھاناپکانا(نیت یہ ہوکہ یہ اللہ کے نام پر ہے مگراسکاثواب فلاں بزرگ کی روح کوپہنچے )اورکھلانامثلاً گیارہویں، یادس محرم الحرام وغیرہ اوردن کی تخصیص نہ کرے مثلاً کبھی بھی کرلے ،کیایہ جائز ہے کیایہ کھاناصرف غرباؤفقراء کھائیں یاکرنیوالااورہرغنی وعام بندہ کھاسکتاہے ؟

    جواب نمبر: 600042

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:44-13t/sd=3/1442

     (۱) براہ راست حضور ﷺ یا حضرت علی رضی اللہ عنہ یا شیخ عبد القادر جیلانی سے مدد مانگنا جائز نہیں ہے ، یہ غیر اللہ سے استمداد ہے ، جس کی شریعت میں اجازت نہیں ہے ،مدد اللہ تعالی ہی سے مانگنی چاہیے ، قرآن شریف میں ہے : ایاک نعبد ایاک نستعین ( سورہ فاتحہ ) یعنی اے اللہ ہم تیری ہی عبادت کرتے ہیں اور تجھ ہی سے مدد چاہتے ہیں، حدیث میں ہے : اذا استعنت فاستعن باللہ ، یعنی جب تو مدد چاہے تو اللہ سے مدد چاہ ۔ ( فتاوی دار العلوم دیوبند : /۱۸ ۲۶۵، سوال نمبر: ۳۱۰، ۳۱۱، انبیاء اور اولیاء سے مدد طلب کرنا جائز نہیں ہے )

    قال الآلوسی : ان الناس قد أکثروا من دعاء غیر اللہ تعالی من الأولیاء الأحیاء منہم والأموات وغیرہم مثل یاسیدی فلان اغثنی ولیس کذلک من التوسل المباح فی شیء۔ ( روح المعانی :۲۹۸/۳، دار الکتب العلمیة، بیروت) ہاں انبیاء اور اولیاء کے وسیلے سے دعا مانگنے میں مضائقہ نہیں۔

    (۲) اگر ایام وغیرہ کی تخصیص کے بغیر محض ایصال ثواب کی غرض سے کھانا پکواکر غریبوں کو کھلادیا جائے ، تو درست ہے ، لیکن غریبوں کے لیے پکے ہوئے کھانے سے کسی غنی کا کھانا مکروہ تنزیہی ہے ، اس میں میت کو ثواب کم پہنچے گا۔( فتاوی رشیدیہ، ص: ۲۷۸، کتاب الجنائز، دار الاشاعت، کراچی)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند