• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 46946

    عنوان: فرض واجب سنت مستحب وغيره مي، فرق

    سوال: براہ کرم درج الفاظ کی تعریف بتائیں۔ فرض واجب مستحب سنت موٴکدہ وغیر موٴکدہ حرام مکروہ مباح

    جواب نمبر: 46946

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1166-1169/M=10/1434

    فرض: وہ ہے جس کا ثبوت قطعی الثبوت وقطعی الدلالة سے ہو اور اس کا منکر کافر ہوجاتا ہے اور واجب: جس کا ثبوت یک گونہ کم تر دلائل سے (یعنی قطعی الثبوت وظنی الدلالة یا ظنی الثبوت وقطعی الدلالة ) ہو (قواعد الفقہ ومراقی الفلاح مع حاشیة الطحطاوی) مستحب: ایسا عمل ہے کہ جس کو اختیار کیا جائے تو ثواب ملے اور اگر نہ کیا جائے تو کوئی گناہ نہیں (درمختار معالشامی: ۲/۱۵۷) مباح: جس کا کرنا اور نہ کرنا برابر ہو یعنی کرنے پر کوئی ثواب نہیں ہوتا اور چھوڑنے پر کوئی گناہ نہیں ہوتا ہے۔ (التعریفات الفقہیہ) مکروہ کی دو قسمیں ہیں۔ (۱) مکروہ تحریمی: جو حرام کے قریب ہو ارو اس کا مرتکب عتاب کا مستحق ہو۔ (۲) مکروہ تنزیہی: جو حلال کے قریب ہو اور کرنے والا مستحق عتاب نہ ہو البتہ چھوڑنے پر ثواب ملے گا (التعریفات الفقہیہ) حرام: وہ ہے جس کا نہ کرنا ایسی دلیل سے ثابت ہو جو قطعی الثبوت وقطعی الدلالت ہو اور حرام کا منکر کافر ہوجاتا ہے (شامی) سنت موٴکدہ: جس پر آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے مواظبت فرمائی ہو اور اس کا بلاعذر چھوڑنا باعث گنا ہے۔ سنت غیر موٴکدہ: جس پر آپ علیہ السلام نے پابندی نہ فرمائی ہو یا آپ نے بطور عادت کیا ہو اور اس کا بلاعذر چھوڑنا اچھا نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند