• عقائد و ایمانیات >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 177886

    عنوان: فجر كا وقت تنگ ہو تو سنتیں چھوڑ سكتے ہیں كیا؟

    سوال:

    فجر کی سنت ادا کرتے وقت طلوع آفتاب کا وقت شروع ہو گیا اب فجر کی فرض نماز کو کس طرح ادا کیا جائے ساتھ ہی یہ بھی بتا دیں کہ اگر فرض نماز کی نیت باندھ لی ہے اور مسجد سے اعلان ہوا کہ طلوع آفتاب کا وقت شروع ہو چکا ہے تو نماز کو پورا کیا جائے یا نہیں؟ شکریہ

    جواب نمبر: 177886

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 746-890/B=01/1442

     اگر فجر کا وقت اتنا تنگ ہے صرف دو رکعت پڑھنے کی گنجائش ہے، تویسی حالت میں سنت چھوڑ کر صرف فرض پڑھ لینا چاہئے، اور اگر فجر ادا کرنے لگے گا تو درمیان میں سورج طلوع ہو جائے گا تو توقف کرنا چاہئے، اور مکروہ وقت نکلنے کے بعد فجر کی قضاء پڑھنی چاہئے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند