• >> اسلامی عقائد

    سوال نمبر: 156002

    عنوان: لاؤڈسپیکر کا مسجدوں میں بے جا استعمال د

    سوال: یہ مسئلہ پہلے بھی پوچھا تھا لیکن جواب ندارد۔ ہمارے محلے میں 3 مساجد ہیں۔صبح نماز کے ایک مسجد سے لاؤڈسپیکر پر درس قرآن شریف ھوتا ہے تو دوپہر کو دوسرے مسجد سے اور شام کو تیسری مسجد سے ۔مسجد کی اندر بمشکل 5 بندے درس قرآن سننے کیلئے بیٹھتے ہیں ۔ مسجد سے باہر والے لوگ اپنے اپنے کاموں میں مصروف ہوجاتے ہیں ۔ کسی کو یہ احساس ہی نہیں ہوتا کہ مسجد سے درس قرآن شریف کی آواز آرہی ہے ۔کیا 5 بندوں کیلئے درس قرآن شریف لاؤڈسپیکر پر ضروری ہے ؟ یہ کام تمام نء فارغ شدہ حضرات کررہے ہیں ۔

    جواب نمبر: 156002

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:195-180/M=3/1439

    اگر یہ سچ ہے کہ مسجد میں درس قرآن سننے والے بمشکل بانچ لوگ ہوتے ہیں تو ان کے لیے لاوٴڈ اسپیکر کی ضرورت نہیں اور بے ضرورت لاوٴڈ اسپیکر کا استعمال درست نہیں، باہر کے لوگ جب اپنے اپنے کاموں میں مشغول ہوتے ہیں اور وہ درس قرآن سننے کے لیے متوجہ نہیں ہوتے تو خواہی نخواہی ان کو دین کی باتیں سنادینا مفید نہیں،نیز اس سے دین کی باتوں کی بے وقعتی ہوتی ہے اس سے بچنا چاہیے اور مائیک کا بے جا استعمال نہیں کرنا چاہیے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند