• معاملات >> سود و انشورنس

    سوال نمبر: 608931

    عنوان:

    مینیمم بیلنس کے لئے سود کی رقم استعمال کرنا

    سوال:

    سوال : بینک میں سیونگ یا کرنٹ اکاؤنٹ کھلوانے کے لئے بینک کی طرف سے اکاؤنٹ ہولڈرز کو مجبور کیا جاتا ہے کہ وہ کچھ رقم مینیمم(کم سے کم ) بیلنس کے طور پر جمع رکھیں، اور اگر کسی وجہ سے وہ اکاؤنٹ میں جمع شدہ رقم مینیمم بیلنس سے کم ہو جاتی ہے تو بینک پینلٹی کے نام سے کچھ رقم اکاؤنٹ سے جبراً وصول کرتا ہے ۔ سوال یہ ہے کہ بینک کی طرف سے سود میں ملی ہوئی رقم کو اس مینیمم بیلنس کے طور پر استعمال کرنا شرعاً کیسا ہے ؟ برائے کرم مدلل جواب مرحمت فرمائیں! بینوا تؤجروا

    جواب نمبر: 608931

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 641-501/M=06/1443

     صورت مسئولہ میں بینک کی طرف سے حاصل سودی رقم کو اس بینک کے اکاوٴنٹ میں مینیمم بیلنس (Minimum balance) کے طورپر رکھنے کی گنجائش ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند