• معاملات >> سود و انشورنس

    سوال نمبر: 56776

    عنوان: میں نے بینک میں سیونگ اکاؤنٹ کھولا تھا پیسے رکھنے کے لیے، مجھے علم نہیں تھا کہ سیونگ اکاؤنٹ میں سود ملتاہے، سات پرسینٹ ہر سال۔جب میں نے اپنے اکاؤنٹ کی تفصیل دیکھی تو سود کے پیسے کریڈٹ ہوگئے تھے۔جس کا مجھے بالکل بھی علم نہیں تھا ۔ براہ کرم، بتائیں کہ میں اس سود ی رقم کا کیا کروں؟ کیا میں وہ سود ی رقم کسی ٹرسٹ /تنظیم میں دے سکتاہوں؟

    سوال: میں نے بینک میں سیونگ اکاؤنٹ کھولا تھا پیسے رکھنے کے لیے، مجھے علم نہیں تھا کہ سیونگ اکاؤنٹ میں سود ملتاہے، سات پرسینٹ ہر سال۔جب میں نے اپنے اکاؤنٹ کی تفصیل دیکھی تو سود کے پیسے کریڈٹ ہوگئے تھے۔جس کا مجھے بالکل بھی علم نہیں تھا ۔ براہ کرم، بتائیں کہ میں اس سود ی رقم کا کیا کروں؟ کیا میں وہ سود ی رقم کسی ٹرسٹ /تنظیم میں دے سکتاہوں؟

    جواب نمبر: 56776

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 58-57/H=2/1436-U بجائے کسی ٹرسٹ/ تنظیم میں دینے کے غرباء فقراء مساکین محتاجوں کو وبال سے بچنے کی نیت کرکے بلانیت ثواب دیدیں، ٹرسٹ یا تنظیم کے افراد تومعلوم نہیں، اس کو کن کن مواقع میں صرف کردیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند