• معاملات >> سود و انشورنس

    سوال نمبر: 56178

    عنوان: ہمارے بھیا کا ایکسیڈینٹ ہوا جس میں بھیا کا انتقال ہوگیا، تو کیاہم کار کے انشورنس کے پیسے لے سکتے ہیں؟ بھیا کے نام سے کوئی انشورنس نہیں ہے، کار کا فل انشورنس نہیں بلکہ تھرڈ پارٹی انشورنس ہے ۔ براہ کرم، جواب دیں۔

    سوال: ہمارے بھیا کا ایکسیڈینٹ ہوا جس میں بھیا کا انتقال ہوگیا، تو کیاہم کار کے انشورنس کے پیسے لے سکتے ہیں؟ بھیا کے نام سے کوئی انشورنس نہیں ہے، کار کا فل انشورنس نہیں بلکہ تھرڈ پارٹی انشورنس ہے ۔ براہ کرم، جواب دیں۔

    جواب نمبر: 56178

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 538-538/Sd=10/1436-U آپ کے بھائی نے کار کے انشورنس میں جتنی رقم جمع کرائی تھی، اسی کے بقدر رقم آپ لے سکتے ہیں، یہ رقم بھائی کے ترکے میں شامل ہوکر ورثاء کے مابین حسب حصص شرعیہ تقسیم ہوگی، جمع کی ہوئی رقم سے زائد ملنے والی رقم کا غرباء اور مساکین پر ثوا ب کی نیت کے بغیر صدقہ کرنا ضروری ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند