• معاملات >> سود و انشورنس

    سوال نمبر: 160266

    عنوان: گھر بنانے کے لیے لون لینا؟

    سوال: حضرت مفتی صاحب! میں نے سنا ہے کہ کچھ صورتوں میں مفتیان کرام گھر بنانے کے لیے لون کی اجازت دیتے ہیں، کیا یہ صحیح ہے کہ مفتیان کرام اس طرح کی اجازت دیتے ہیں؟ اگر ہاں! تو کن کن صورتوں میں؟ اور کس قسم کی لون کی اجازت ہے؟ برائے مہربانی تفصیل سے بتائیں۔

    جواب نمبر: 160266

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:875-760/H=7/1439

    اگر کسی کے پاس رقم موجود ہے اور وہ اس سے مکان بنائے گا تو حکومت بازپرس کرے گی، اور ٹیکس لگادے گی یا کوئی سرکاری ملازم ہے اور وہ گھر کے لیے لون لے لیتا ہے تو اس سے انکم ٹیکس میں تخفیف ہوجاتی ہے تو ان صورتوں میں گھر کے لیے لون لینے کی گنجائش ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند