• معاملات >> سود و انشورنس

    سوال نمبر: 153647

    عنوان: بینک سے ملے سود سے اپنے لئے غسل خانہ اور بیت الخلاء بنانا

    سوال: ایک شخص بینک سے ملے سودکے روپئے سے اپنے لئے غسل خانہ اور بیت الخلاء بنانا چاہتاہے تو کیا سود کے روپئے سے اپنے لے بیت الخلاء بناسکتاہے ؟

    جواب نمبر: 153647

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa: 1275-1193/sd=12/1438

    بینک سے ملنے والی سود کی رقم کا حکم یہ ہے کہ ثواب کی نیت کے بغیر غریب مسکین کو دیدی جائے ، اس رقم سے بیت الخلاء یا غسل خانہ بنانا جائز نہیں ہے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند