• معاملات >> وراثت ووصیت

    سوال نمبر: 602219

    عنوان:

    جس پوتے كے باپ كا انتقال ہوچكا ہے ‏، كیا وہ دادا كی وصیت سے جائیداد میں شریك بن سكتا ہے؟

    سوال:

    میرا باپ میرے دادا کی زندگی میں انتقال کر گئے تو میرے دادا نے وصیت کیا کے میرا پوتا کا ( یعنی میں) میرے بیٹے کے جیسا میرے جائداد میں حصہ ہیں اور اس بات کے گواہ میرے دو چچا ہیں، تو میرا سوال یہ ہیں کہ کیا میں اپنے دادا کہ جائداد میں حصہ دار بن سکتا ہوں؟

    جواب نمبر: 602219

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:394-297/N=5/1442

     اگر آپ کے دادا نے وصیت کی ہے کہ میرا پوتا (آپ) میرے مرنے کے بعد میری جائداد میں ایک بیٹے کے بہ قدر حصے دار ہوگا تو یہ وصیت شرعاً درست ہے؛ لہٰذا آپ دادا مرحوم کی جائداد میں بہ طور وصیت مرحوم کے ایک بیٹے کے بہ قدر حصہ پائیں گے۔

    الوصیة تملیک مضاف إلی ما بعد الموت (ملتقی الأبحر مع مجمع الأنھر والدر المنتقی، أول کتاب الوصایا، ۴: ۴۱۷، ط: دار الکتب العلمیة، بیروت)، ومثلہ في کتب الفقہ الأخری۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند