• معاملات >> وراثت ووصیت

    سوال نمبر: 31909

    عنوان: ایک خاتون فوت ہوئیں، اُس کے ورثاکون کون سے ہوں گے؟ جبکہ اُس کا شوہر ، ایک بیٹا، دو بیٹیاں، ماں باپ، پانچ بھائی اور چار بہنیں ہیں۔ ۔ وراثت کی تقسیم کیسے ہو گی؟

    سوال: سوال یہ ہے کہ ایک خاتون فوت ہوئیں، اُس کے ورثاکون کون سے ہوں گے؟ جبکہ اُس کا شوہر ، ایک بیٹا، دو بیٹیاں، ماں باپ، پانچ بھائی اور چار بہنیں ہیں۔ ۔ وراثت کی تقسیم کیسے ہو گی اور کن کن چیزوں میں ہو گی؟ تفصیل سے بتادیں۔

    جواب نمبر: 31909

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی(م): 827=827-5/1432 صورت مسئولہ میں اس متوفیہ عورت کے شرعی ورثہ اس کے شوہر، بیٹے، بیٹیاں اورماں باپ ہیں، متوفیہ کے بھائی اور بہنیں سب اس صورت میں محروم ہوں گے، وراثت میں اس خاتون کی مملوکہ تمام اشیاء مثلاً زمین، مکان، زیورات، روپیہ، کپڑے اور دیگر تمام سامان جو اس کی ملکیت میں تھے وہ ترکہ شمار ہوں گے، صورت مذکورہ میں اس متوفیہ خاتون کا پورا ترکہ 48سہام میں منقسم ہوگا،جن میں سے 12سہام شوہر کو اور 8,8 سہام ماں باپ میں سے ہرایک کو اور 10سہام بیٹے کو اور 5,5 سہام دونوں بیٹیوں میں سے ہرایک کو مل جائیں گے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند