• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 69351

    عنوان: جیلاٹن كی اگر ماہیت بدل جائے تو كیا اس كا استعمال درست ہے؟

    سوال: جیلاٹن؛اگر حرام شئی کی ماہیت بدل جائے (جیسے دوائی وغیرہ میں غیر شرعی مذبوحہ گائے کی چربی یا جیلاٹن کا استعمال کرنا )تو کیا وہ جائز اور پاک ہوگی؟ براہ کرم، اس بارے میں رہنمائی فرمائیں۔

    جواب نمبر: 69351

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1100-1120/SN=12/1437

    اگر شرعی دلیل سے یہ بات ثابت ہوجائے کہ “جیلاٹن“ بنانے میں جن ناجائز اجزاء کا استعمال ہوا ہے ”جیلاٹن“ بننے کے بعد ان کے سابقہ خواص و اثرات مکمل طور پر بدل چکے ہیں تو ”جیلاٹن“ کے پاک ہونے کا حکم کیا جائے گا؛ اس لیے کہ ”انقلاب ماہیت“ مطہرہے خصوصاً ان چیزوں میں جن میں عمومِ بلوی ہو، او ر”جیلاٹن“ میں فی زماننا ”عمومِ بلوی“ ہے۔ ”جیلاٹن“ کے سلسلے میں ”چند اہم عصری مسائل“ (جو دارالعلوم دیوبند سے جاری ہونے والے فتاوی کا منتخب مجموعہ ہے) کی دوسری جلد (ص: ۳۲۴ تا ۳۳۴) میں دو تفصیلی فتوے موجود ہیں، ان کا مطالعہ بہت مفید ہوگا۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند