• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 68576

    عنوان: اپنی بیوی کے علاوہ کسی اور کے ساتھ قصدا ہم بستر ہونے کا خیال لانا بھی ناجائز ہے

    سوال: كیا كسی بھی مسلمان كو زنا كرنا جائز ہے؟ كیا خیالات سےابھی زنا جاءز ہے؟ اگر مسلمان خیالات كرتا ہے كہ وہ اپنی بیوی كے علاوہ كسی كے ساتھ ہمبستر ہورہا ہے تو كیا یہ زنا كرنے كے برابر ہے؟

    جواب نمبر: 68576

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 828-830/SD=10/1437 کسی مسلمان کے لیے زنا کرنا ناجائز و حرام ہے اور اپنی بیوی کے علاوہ کسی اور کے ساتھ قصدا ہم بستر ہونے کا خیال لانا بھی ناجائز ہے، اس کا گناہ اگرچہ بالفعل زنا کے گناہ کے برابر نہیں ہے؛ لیکن ایسا خیال دل میں لانا بڑی بے شرمی او ربے حیائی کی بات ہے۔ قال اللہ تعالی: وَلَا تَقْرَبُوْا الزِّنَا؛ إنَّہ کَانَ فَاحِشَةً، وَّسَاءَ سَبِیْلًا․ (الإسراء: ۳۲)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند