• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 606958

    عنوان:

    نکاح کے موقع پر لڑکے والوں سے مسجد کے لیے پانچ ہزار روپئے وصول کرنا؟

    سوال:

    سوال : ہمارے گاؤں میں جب بھی کسی لڑکے کا نکاح ہوتا ہے ،تو لڑکے والوں سے اخراجات مسجد کے نام پر پانچ ہزار وصول کئے جاتے ہیں، کیا یہ درست ہے ؟قرآن و حدیث کی روشنی میں جواب دیں ۔

    جواب نمبر: 606958

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 293-206/M=03/1443

     اگر آپ کے گاوٴں میں اس طرح کا رواج بنا ہوا ہے کہ جب بھی کسی لڑکے کا نکاح ہوتا ہے تو لڑکے والوں سے مسجد کے نام پر پانچ ہزار روپئے وصول کیے جاتے ہیں اور لڑکے والے کو ہرحال میں دینا ہی پڑتا ہے چاہے اس کی حیثیت اتنی رقم دینے کی نہ ہو، نہ دینے کی صورت میں اس کو برا سمجھا جاتا ہے تو اس طرح جبر و دباوٴ کے ساتھ لینا درست نہیں، یہ رواج واجب الترک ہے، خوش دلی کے بغیر چندہ لینا دینا حلال نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند