• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 603076

    عنوان: کیا اسلامی ویڈیوز دیکھنا جائز ہے ؟ 

    سوال:

    شیخ کیا اسلامی ویڈیوز دیکھنا جائز ہے ؟ دستاویزات کے ساتھ سوال کا جواب دیں۔

    جواب نمبر: 603076

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa:520-408/N=7/1442

     اسلامی ویڈیوز (جان دار کی تصاویر کے ساتھ دینی بیانات) اگر معتبر علمائے کرام کی ہوں تو انھیں سافٹ ویئر کے ذریعے صرف آڈیوز میں تبدیل کرلیا جائے یا کرالیا جائے، پھر ان سے استفادے میں کچھ حرج نہیں، اور اگر کسی کے لیے ویڈیو کو آڈیو میں تبدیل کرنا یا کرانا مشکل ہو اور کوئی ضروری بیان ہو تو ایسی صورت میں تصویر دیکھے بغیر صرف آواز سن کر استفادہ کرے اور لیپ ٹاپ یا موبائل وغیرہ کی اسکرین پر کوئی کپڑا وغیرہ ڈال دے ؛ کیوں کہ شریعت میں بلا ضرورت شرعیہ بالقصد وارادہ جان دار کی تصویر دیکھنا بھی ناجائز وممنوع ہے (جواہر الفقہ،۷:۲۶۴، ۲۶۵، رسالہ: تصویر کے شرعی احکام ، مطبوعہ: مکتبہ دار العلوم کراچی، احسن الفتاوی (۸: ۱۸۹، ۱۹۰مطبوعہ :ایچ، ایم سعید کراچی، اور مسائل خواتین، موٴلفہ: حضرت مولانا محمد یوسف صاحب لدھیانوی۲: ۵۹۰وغیرہ)۔

    وھذا کلہ مصرح في مذھب المالکیة وموٴید بقواعد مذھبنا، ونصہ عن المالکیة ما ذکرہ العلامة الدردیر فی شرحہ علی مختصر الخلیل، حیث قال:یحرم تصویر حیوان عاقل أو غیرہ إذا کان کامل الأعضاء إذا کان یدوم، وکذا إن لم یدم علی الراجح کتصویرہ من نحو قشر بطیخ، ویحرم النظر إلیہ إذ النظر إلی المحرم لحرام اھ( از بلوغ القصد والمرام، ص :۱۹)۔ (جواہر الفقہ، ۷: ۲۶۵، مطبوعہ: مکتبہ دار العلوم کراچی)۔

    وفي حاشیة الفتال:وذکر الفقیہ أبو اللیث في تأسیس النظائر أنہ إذا لم یوجد في مذھب الإمام قول في مسألة یرجع إلی مذھب الإمام مالک؛ لأنہ أقرب المذاھب إلیہ اھ (رد المحتار، کتاب الطلاق، باب الرجعة، مطلب: مال أصحابنا إلی بعض أقوال مالک رحمہ اللّٰہ ضرورةً، ۵: ۴۲، ط: مکتبة زکریا دیوبند، ۹: ۶۵۱، ۶۵۲، ت: الفرفور، ط: دمشق)۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند