• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 602004

    عنوان:

    انشورنس سروسز كا كیا حكم ہے؟

    سوال:

    نہایت ادب کے ساتھ گزارش ہے کہ مذاربہ کے نام سے جو انشورینس سروسز چل رہے ہیں یہ جائز ہے یا نہیں ؟ ان انشورینس کمپنیوں کا دعوی ہے کہ وہ حلال پروڈکٹس میں رقم کو انویسٹ کرتے ہیں ۔ باقی فارمولے تقریبا عام انشورنس کمپنیوں سے ملتے جلتے ہیں۔ پاکستان میں اسٹاک مارکیٹ میں ہر انشورنس کمپنی اینوسٹ کرتی ہے اور وہاں سے جو منافع ملتا ہے وہ شراکت کے ذریعے انشورینس کمپنی اور انشورنس کرنے والے شخص کے درمیان تقسیم ہوتا ہے ۔ کیا اسلام میں انشورنس کی کوئی گنجایش ہے ۔ مشورہ چاہیے ۔ شکریہ

    جواب نمبر: 602004

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 452-328/B=05/1442

     انشورنس کمپنی میں جو کچھ کاروبار ہوتا ہے اس میں سود اور قمار دونوں چیزیں پائی جاتی ہیں، اور یہ دونوں چیزیں قرآن پاک میں حرام بتائی گئی ہیں۔ آپ کے پاکستان میں اسٹاک مارکیٹ میں انشورنس کمپنی جو انویسٹ کرتی ہے اگر اس کا طریقہٴ کار کچھ الگ ہو تو اپنے یہاں کے مقامی علماء سے دریافت فرمالیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند