• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 600401

    عنوان:

    کمپیوٹر میں استعمال ہونے والے سافٹ ویئر بغیر خریدے استعمال کرنا

    سوال:

    امید ہے آپ بخیریت ہوں گے دریافت طلب مسئلہ یہ ہے کہ جو سافٹویئر ہم کمپیوٹر میں استعمال کرتے ہیں وہ پائریٹیڈ ہوتے ہیں یعنی انکو بنانے والی کمپنی تو اصل طور پر انہے پیسوں کے بدلے فروخت کرتی ہیں لیکن ان سافٹویئر میں اندرونی طور پر کچھ ترمیمات کرکے ان کا کوڈ بریک کر دیا جاتا ہے اور اب وہ سافٹویئر بغیر کسی کوڈ کے جسکو کمپنی پیسوں کے بدلے بیچتی ہے اسکے بغیر ہی اب اسے استعمال کیا جا سکتا ہے . ہماری رائے کے مطابق اگر کہا جائے کہ 90 فیصد لوگ انہی پائریٹیڈ سافٹ ویئر کو استعمال کرتے ہیں تو غلط نہ ہوگا تو کیا اس طریقہ سے یہ استعمال جائز ہے ؟ ان کے ذریعہ کی ہوئی کمائی کا کیا حکم ہے نیز یہ بات بھی قابل لحاظ ہے کہ یہ سافٹویئر کافی زیادہ مہنگے ہوتے ہیں جنہیں اگر خرید کر کاروبار کیا جائے تو کوئی بھی عام آدمی بمشکل کچھ کما سکے ساتھ ہی یہ بات بھی ہے کہ ان کمپنیوں کو اکثر یہ معلوم ہوتا ہے کہ ہمارا سافٹویئر اکثر اسی طرح پائریٹیڈ طور پر استعمال ہو رہا ہے پر وہ کوئی مخالفت اس لئے نہیں کرتے کہ اس نظام کے ذریعے انکو بھی مختلف فوائد حاصل ہوتے ہیں۔ حتی کہ اگر یہ کمپنیاں چاہیں تو انٹرنیٹ کے ذریعہ اس بات کا پتہ لگا سکتی ہیں کہ انکا سافٹویئر کہاں بغیر اجازت استعمال ہو رہا ہے ۔ مگر انہی فوائد کی وجہ سے وہ ایسا نہیں کرتیں۔ تو کیا اس بات کو سامنے رکھکر یہ مانا جا سکتا ہے کہ ان کمپنیوں کے جاننے کے باوجود مخالفت نہ کرنا گویا ان کی طرف سے اجازت ہے اور ان سافٹ ویئر کا استعمال درست ہے ؟

    جواب نمبر: 600401

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa : 159-11T/B=02/1442

     صورت مذکورہ میں جب کمپنی کے علم میں ہے اور وہ کوئی مخالفت نہیں کرتی ہے تو یہ دلالةً اجازت ہی سمجھی جائے گی، اس لئے بظاہر ایسے سافٹ ویئر کا استعمال کرنے میں کوئی حرج نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند