• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 50118

    عنوان: کمپیوٹر پر کمائی؟

    سوال: ہمارے یہاں ونڈوژ اور سافٹ وئر وغیرہ پایریٹد یعنی ان کو غلط طریقے سے اکٹیویٹ کیا ہوتا ہے جو کہ آسانی سے ۳۰ روپے کی سی ڈی اور ۶۰ کی ڈی ۔ وی ڈی میں مل جاتا ہے جبکہ ونڈوژ کی اصل قیمت ہزاروں میں ہیں اور سافٹویر لاکھ دو لاکھ تک ہیں کیونکہ سب کی قیمت ڈالر میں ہے اور پاکستان میں ڈالر کا ریٹ بہت زیادہ ہے ۔اصل سافٹ وئر ایک تو مشکل سے ملتا ہے دوسرا یہ کہ ہماری خرید سے باہر ہے ایک عام بندہ خرید نہیں سکتا کیونکہ کمپیوٹر کا دور ہے اور ہر کام کمپیوٹر پر ہی ہوتا ہے انٹرنیٹ پر ٹایپنگ اور گرافکس وغیرہ کی جاب ملتی ہیں اب مسلہ یہ ہے کہ ہمارے پاس تو اصل ونڈوژ ہی نہیں اور سافٹوئر بھی ٓاصل قیمت پر خریدا ہوا نہیں ہے بلکہ پایریٹڈ ہے تو کیا اس صورت میں ہماری کمائی حلال ہوگی یا حرام؟ محنت تو ہماری ہے مگر سافٹویئر ٓاصل قیمت والا نہیں ہے کیا ان سے اتنا کمایا جائے کہ اصل سافٹوئیر خریدنے کے قابل ہوجائیں اور پھر اصل سے کام کریں۔ جیسا کہ جنگ یا مفلسی کی حالت میں ہوتا ہے کہ حرام جانور کا گوشت کھاسکتے ہیں مگر صرف اتنا کہ بھوک مٹ جائے خواہش نہ ہو۔ ۔ پھر حلال کی جستجو کرتے ہیں

    جواب نمبر: 50118

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 903-917/N=8/1435-U صورت مسئولہ میں کمائی پر حرام ہونے کا حکم نہ ہوگا، البتہ احتیاط اور تقویٰ کی بات یہ ہے کہ اصل سافٹ ویئر استعمال کرنے کی کوشش کی جائے۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند