• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 48262

    عنوان: موہوم اندیشوں کی وجہ سے سودی قرض لینا ؟

    سوال: زید کی والدہ کی طبیعت خراب تھی، اسپتال میں بھرتی کرنے لئے آٹو رکشا درکار تھا ، لیکن رات زیادہ ہونے کی صورت میں آٹوڈارئیور نے آنے سے انکار کردیا اور صبح ہونے تک انتظار کرنا پڑا ، زید کی بیوی بھی مختلف امراض کے سبب بیمار رہا کرتی ہے اورزید بھی خود بلڈ پریشر کا مریض ہے ، مندردرجہ بلا حالات میں کبھی بھی ٹرانسپورٹ کی ضرورت پیش آسکتی ہے ، ایسے حالات میں کیا میں اپنے آفس سے سودی لون لے کر فورویلر (چار چکا) خرید سکتاہوں اور کیا اس فورویلر کو دیگر ضروریات کے وقت کا استعمال کرسکتا ہوں؟

    جواب نمبر: 48262

    بسم الله الرحمن الرحيم

    Fatwa ID: 1755-1421/B=1/1435-U مذکورہ اندیشوں کی وجہ سے سودی قرض لینا جائز نہ ہوگا، ٹرانسپورٹ کی ضرورت کا حل اپنی ملکیت میں ہونے پر منحصر نہیں، کوئی بلا سود قرض دے تو لینے میں کوئی حرج نہیں۔


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند