• متفرقات >> حلال و حرام

    سوال نمبر: 41159

    عنوان: جن دنوں اسكول بند رہتا ہے ان دنوں كی فیس لینا

    سوال: میں ایک ا سکول میں ٹیچر کی نوکری کرتا ہوں، یہ اسکول ایک انگلش میڈیم میں ہے جو کہ دین کی تعلیم بھی دیتا ہے،اس سکول میں جون کے میں مہینے کی فیس بچوں سے لی جاتی ہے، جب کہ جون میں اسکول بند رہتا ہے، کیا یہ صحیح ہے؟اور سکول والے مسلم ہے اور دیوبندی بھی ہے، لیکن وہ لوگ جون کے مہینے کی تنخواہ ٹیچرس کو نہیں دیتے، تو اس حالت میں ا سکول کا یہ پیسہ جو کہ جون کے مہینے میں بچوں سے لیا گیا اور ٹیچرس کو نہیں دیا گیا تو یہ حرام ہے یا نہیں؟

    جواب نمبر: 41159

    بسم الله الرحمن الرحيم

    فتوی: 1805-1401/B=11/1433 جب جون میں اسکول بند رہتا ہے تو اس میں فیس لینے کی کوئی ضرورت نہیں، جب اسکول کا نیا سال شروع ہو اس وقت طالب علموں سے فیس لینی چاہیے، اگر کوئی اہم اور ضروری مصلحت ہو تو جون میں بھی فیس لے سکتے ہیں، اپنے یہاں جو بھی اصول بنالیں وہ درست رہے گا، البتہ جولائی کی تنخواہ ٹیچرس کو دینی چاہیے۔ حاصل یہ کہ پہلے سے بتلادیں کہ کل بارہ ماہ کی فیس لی جائے گی، تو یہ معاملہ درست رہے گا۔(د)


    واللہ تعالیٰ اعلم


    دارالافتاء،
    دارالعلوم دیوبند